Home / آس پاس / حکومت پنجاب نے مسافر گاڑیوں میں سی این جی اور ایل پی جی گیس کے استعمال پر پابندی عائد کر دی
daily hujra news

حکومت پنجاب نے مسافر گاڑیوں میں سی این جی اور ایل پی جی گیس کے استعمال پر پابندی عائد کر دی

حجرہ شاہ مقیم (فہیم احمد غوری سے) حکومت پنجاب نے مسافر گاڑیوں میں سی این جی اور ایل پی جی گیس کے استعمال پر پابندی عائد کر دی، سلنڈرز کی ناقص وائرنگ سے آتش زدگی اور قیمتی جانوں کو خطرات لاحق تھے، ان خیالات کا اظہار ڈسٹرکٹ ٹریفک آفیسر اوکاڑہ وسیم اختر نے ٹریفک سٹاف کی ہنگامی میٹنگ میں بریفنگ دیتے ہوئے کیا،

انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب کے سیکرٹری ٹرانسپورٹ، چیئرمین پنجاب پروانشل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی طرف سے جاری حکم نامہ کی روشنی میں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر اوکاڑہ جہانزیب نذیر نے ہدایت کی ہے کہ مسافر گاڑیوں میں سی این جی اور ایل پی جی گیس کو بطور ایندھن استعمال کرنے پر مکمل طور پر پابندی عائد کر دی گئی ہے،ا س سلسلے میں انسپکٹر ٹریفک ہیڈکوارٹر کو ضلع کی ٹریفک سرکلز اوکاڑہ،رینالہ خورد اور دیپالپور کے ڈی کلاس ویگن سٹینڈ ز اور جنرل بس سٹینڈز سے ضلع بھر میں مختلف روٹس پر مسافروں کو لے جانے والی ہائی ایس ویگنوں، مزدا گاڑیوں اور رکشوں میں LPG/CNG گیس کو گاڑیوں میں ہر گز استعمال نہ کرنے کے حکم پر سختی سے عملدرآمد کروایا جائے تاکہ سی این جی گیس سیلنڈرز کی ناقص وائرنگ کے سبب گاڑی میں آتشزدگی کے حالیہ اور گذشتہ ناخوشگوار واقعات کو مدِ نظر رکھتے ہوئے آئندہ ان گاڑیوں میں سفر کرنے والے افراد کے تحفظ کو یقینی بنایا جا سکے،
ڈسٹرکٹ آفیسر وسیم اختر نے مزید کہا کہ قبل ازیں لاری اڈا، ویگن اسٹینڈز مینجرز و ڈرائیوران کو زبانی و تحریری آگاہی دی جا چکی ہے البتہ وقتی طور پر سرکاری حکم نامہ پر عمل درآمد کروانے میں تنقید،شکایت اور تلخ کلامی جیسے ردعمل کا سامنا ہو سکتا ہے لہذا انہیں خوش اخلاقی کے ساتھ سمجھائیں کہ چند روپوں کی بچت کی خاطر معصوم لوگوں کی جانوں سے نہیں کھیلا جا سکتا اس سرگرمی میں ملوث گاڑیوں کے روٹ پرمٹ اور فٹنس سرٹیفکیٹ کو کینسل کیا جائے گا،
ڈسٹرکٹ ٹریفک آفیسر وسیم اختر نے کہا کہ شہریوں کو حادثات سے بچانے اور محفوظ سفری سہولتوں کے لیے کوشاں رہنا ٹریفک پولیس کی اولین ذمہ داری ہے حالیہ چند مہینوں سے ٹریفک پولیس کے بارے عوامی ردعمل قابل ستائش ہے،جو سٹاف کی بے پناہ توجہ اور اعلی انتظامی صلاحیتوں کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے