Home / اردو کالمز / سانحہ ساہیوال : ریاست جیت گئی، عوام ہار گیے
urdu columns

سانحہ ساہیوال : ریاست جیت گئی، عوام ہار گیے

‏ تحریر : ارشد فاروق بٹ
ریاست اور عوام کی جنگ میں فتح ہمیشہ ریاست کی ہوتی ہے، طاقت کی ہوتی ہے، وردی کی ہوتی ہے. بھیڑ بکریاں مرنے کے لیے ہی پیدا ہوتی ہے. 2 فیصد حاکم لوگوں کے ملک میں 21 کروڑ محکوم بھیڑ بکریوں کی حیثیت کیا ہے دیکھ لیجیے اور سمجھ بھی لیجیے. بولو گے تو پہلے مارے جاؤ گے اور چپ رہو گے تو پھٹ جاؤ گے.

ریاست چاہے تو ریمنڈ ڈیوس کو پروٹوکول کے ساتھ رہا کرے چاہے تو بے گناہوں کو ماڈل ٹاؤن اور قادر آباد میں دن دیہاڑے قتل کرے. بچنا ہے تو دن رات سامراج کی عطا کردہ وردی پہنے رکھئے اور سوتے میں بھی کبھی بھول کر گھٹنوں تک آتے سیاہ بوٹ مت اتاریے.

اور اگر آپ باوردی ہیں اور ڈولفن جیسے ادارے میں ملازم ہیں اور آپ کے بھائی کو مار دیا جائے تو زبان سی لیجئے، وردی آپ نے پہن رکھی ہے، آپ کے بھائی نے نہیں. اور اگر آپ نے پھڑپھڑانے کی کوشش کی تو آپ کا کردار بھی مشکوک قرار دے کر کسی کال کوٹھڑی میں پھینک دیا جائے گا. وردی اور انصاف دونوں سے جاؤ گے.

ریاست اور عوام کی اس جنگ کے آخری معرکے کا دھبہ ساہیوال کے نام ٹھہرا جس نے سامراجی نام منٹگمری سے تو جان چھڑا لی لیکن سامراجی نظام کی بیڑیوں سے اب بھی اس کے پاؤں خون آلود ہیں.

بھیڑ بکریوں کے ریوڑ کے جذبات نہیں ہوتے، اگر ریوڑ کے سامنے جنگل کا بادشاہ کچھ کو چیر پھاڑ دے تو اس سے ریوڑ کے مجموعی جذبات میں کوئی فرق نہیں پڑتا، بھیڑ بکریاں گھاس چرنا جاری رکھتی ہیں.

بے حسی کا عالم اسی دوران جاری تھا جس وقت سی ٹی ڈی کے شیر جوان ماں بیٹی کو گولیاں مار رہے تھے. قریب کھڑی بس کے شیشے میں سے ایک شہری قتل عام کی ویڈیو بنا رہا تھا، جبکہ بس میں اس وقت بھارتی گانے بھیڑ بکریوں کے جذبات کی عکاسی کر رہے تھے.

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت جس کے منشور کا محور ہی انصاف تھا، اس کے چیئرمین عمران خان سانحے کو پس پشت ڈال کر قطر تشریف لے گئے.

بھیڑ بکریوں کے دیس میں ججوں کی تاریخ بھی اتنی ہی سیاہ ہے جتنی کالے بوٹوں کی. یقین مانئے ان ججوں نے کبھی مایوس نہیں کیا. ہر فیصلہ جنگل کے بادشاہ کے حق میں آتا ہے.

بھیڑ بکریوں سے گزارش ہے کہ محتاط ہو جائیں کیونکہ باعزت بری ہونے والے سی ٹی ڈی کے قاتل اہلکار آج سے دوبارہ آن ڈیوٹی ہو گئے ہیں. ایسا نہ ہو بے خبری میں آپ رگڑے جائیں.

About Muhammad Saeed

Avatar
I am Muhammad Saeed and I’m passionate about world and education news with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind Sahiwal News with a vision to broaden the company’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Mehar Abad Colony, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Phone: (+92) 300-777-2161 Email: admin@sahiwalnews.com.pk

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے